علماء رمضان المبارک میں حکومت کے بیس نکات پر سختی سے عمل درآمد کروائیں ڈپٹی کمشنر سرگودہا

سجاد بھٹی سے ۔۔۔۔۔۔۔علماءمساجد میں حکومتی ایجنڈا ہر صورت نافذ کروائیں ۔ڈپٹی کمشنر کی اپیل

سرگودہا: ۔ڈپٹی کمشنر عبداللہ نیئر شیخ نے علماءواکابرین مسالک پر زور دیا ہے کہ وہ حکومت کے جاری کر دہ 21 نکاتی ایجنڈا پر مکمل عمل درآمد کو یقینی بنائیں تاکہ نماز تراویح اور رمضان المبارک میں دیگر عبادات کاسلسلہ جاری رہ سکے ۔بزرگ‘ بچے اور قوت مدافعت کی کمزوری والے افراد مساجد کی بجائے گھروںمیں عبادت کریں اور رمضان المبارک کے فیوض وبرکات سے استفادہ کریں ۔علماءمنبر ومحراب کے ذریعے نمازیوں کو سماجی دوری اور وبائی امراض میں قرآن وسنت کی روشنی میں آگاہی دیں تاکہ کورونا وائرس کے پھیلا¶ کو روکنے میں مدد مل سکے ۔ اعتکاف اور دیگر نفلی عبادات کی مساجد میں اجازت اس 21 نکاتی ایجنڈا پر عمل درآمد سے مشروط ہے اگر وائرس کاپھیلا¶ کنٹرول نہ کیا گیا توحکومت کو سخت فیصلے کرنا پڑیںگے اس ایجنڈا کی منسوخی بھی شامل ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلعی امن کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کر تے ہوئے کیا ۔اجلاس میں ڈی پی او سرگودہا فیصل گلزار ‘ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر بلال فیروز جوئیہ ‘ تمام مسالک کے جید علماءمولانا اکرم طوفانی ‘ پیر جاوید قادری ‘ ریاست علی فیروزی ‘شاہین احسان مغل ‘بھائی عبدالرحمان ‘ حاجی عبدالرحمان ‘ عرفان اللہ ثنائی ‘ قاری عبدالوحید ‘ قاری احمد علی ندیم ‘ حسن طاہر کرمانی ‘ احمد مسعود زاہد ی ‘ مولانا عمر فاروقی ‘ قاری وقار عثمانی ‘ مولانا طاہر مسعود ‘ میاں عبدالجبار ‘ میاں طاہر محمود ‘ بشیر خان بلوچ ‘ اسلم نعیم کپور ‘ سعید اختر گوئندی ودیگر بھی شریک تھے ۔ ڈپٹی کمشنر نے واضح کیاکہ مساجد میں اجتماعی افطاری او رسحری کی اجازت نہیں ہوگی۔انتظامیہ احترام رمضان آرڈی نینس کی پابندی کو یقینی بنائے گی اور خلاف ورزی پر سخت کارروائی کی جائیگی۔ انہوں نے متنبہ کیاکہ اس وقت کورونا مریضوں کی تعداد میں روزبروز اضافہ ہو رہا ہے جو عوام کیلئے خطرات سے خالی نہیں ۔انتظامیہ تمام تر وسائل بروئے کار لا کر اس وائرس کو پھلنے سے روکنے کی کوشش کر رہی ہے لیکن عوامی تعاون کے بغیر کاوشیں کارگر ثابت نہ ہوںگی ۔ مساجد کے داخلی راستوں پر مسٹ سپرے گیٹ نصب کئے جائیں ۔نمازیوں کو ماسک او رگلوز کاعادی بنایاجائے۔ وضو گھر سے کر کے آنے کی پابندی اپنائی جائے ۔مساجد کی دھلائی اور واشنگ کا انتظام کیا جائے ۔ صفوں او رچٹائیوں کا استعمال نہ کیا جائے۔ مساجد کمیٹیاں ایجنڈے کے نفاذ کی پابند ہوں گی اور خلاف ورزی پر انہیں ذمہ داری قبول کرنا پڑے گی ۔ مساجد میں چھ فٹ کی دوری اپنائی جائے بلاجواز مساجد میں اجتماع نہ کئے جائیں ورنہ مجبورا مساجد بند کرنا پڑیں گی جس کی تمام تر ذمہ داری مساجد کمیٹیوں او رنمازیوں پر عائد ہو گی ۔ اجلاس میںڈسٹرکٹ پولیس آفیسر فیصل گلزار نے علماءکو حکومتی پابندیوں پر عمل درآمد کو یقینی بنانے کی ہدایت کی تاکہ نقص امن پیدا نہ ہونے پائے اور رمضان المبارک کی تقدیس بھی قائم رہے ۔اجلاس میں علماءاو راکابرین مسالک نے کورونا وائرس کی وبا ءکے خاتمہ کیلئے جہاں عبادات کی کثرت پر زوردیا وہاں اپنے ہرممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی جبکہ تاجر حضرات نے احترام رمضان آرڈی نینس کے ضمن میں کورونا وائرس آرڈی نینس کی روشنی میں ترمیمی ضابطوں سے آگاہ کرنے کی ضرورت پر زور دیا ۔اجلاس میں اہل تشیع کی طرف سے شہادت علی المرتضیٰ کے ضمن میں مجالس کے انعقاد کیلئے ضابطہ جاری کرنے کا مطالبہ کیا گیا تاکہ کورونا وائرس سے بچاجاسکے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow