بارشوں کی کثرت کے باعث سیلابی صورتحال ضلع کے تمام اداروں کو الرٹ کردیا گیا

بارشوں کی کثرت کے باعث سیلابی صورتحال کا اندیشہ ہے ۔ ڈپٹی کمشنر عبداللہ نیئر شیخ
جانوروں کو منہ کھر ‘گل گھوٹو‘پیٹ کی بیماریوں سے متعلق ویکسین لگوائی جائے ۔ ڈی سی کی ہدایت
منگلا ڈیم اپنی گنجائش کے مطابق بھرا ہوا ہے اس کا آوٹ فلو پہلے کی نسبت دریائے جہلم میں چالیس ہزار کیوسک زیادہ جاری ہے۔محکمہ انہار کی بریفنگ

سرگودہا (24 اپریل 2020)۔ڈپٹی کمشنر سرگودہا عبداللہ نیئر شیخ نے کہا ہے کہ بارشوں کی کثرت ‘ طویل موسم برسات اور موسمی شدت کے باعث گلیشیر کے پگھلنے سے سیلابی صورتحال پیداہونے کے خطرات منڈلارہے ہیں جبکہ دریاوں میں طغیانی کے باعث بند اور ساحلی پٹیوں پر کٹاو کا سلسلہ جاری ہے ۔حکومت ناخوشگوار حالات سے نمٹنے کیلئے تمام مادی وسائل بروئے کار لارہی ہے تاہم عوام بالخصوص ضلع کی دریاوں کے قریب آبادیوں میں بسنے والے سیلابی صورتحال کی پیشگی اطلاعات پر فوری عمل درآمد کرتے ہوئے نقل مکانی کیلئے تیاری رکھیں تاکہ ان کے جان ومال کے تحفظ کو یقینی بنایاجاسکے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلعی فلڈ کنٹرول کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو میثم عباس ‘ لوئر جہلم کینال کی تمام سب ڈویژنوں کے ایگزیکٹو انجینئر ‘ اسسٹنٹ کمشنرز ‘ چیف میٹروپولیٹن افسر رضوان علی ‘ڈسٹرکٹ ایمر جنسی آفیسر مظہر شاہ ‘ایڈیشنل ڈائریکٹر لائیوسٹاک ارشاد احمد کے علاوہ تمام متعلقہ محکموں اور بلدیاتی اداروں کے افسران بھی موجود تھے ۔ ڈپٹی کمشنر نے محکمہ انہار کو ہدایت کی کہ وہ لنگر والا ‘ طالب والا ‘ یکے والا ‘میگا کدھی او ردیگر مقامات پر حفاظتی بندوں کا خود معائنہ کریں اور ان کی پختگی کو یقینی بنایاجائے ۔جنگلی جانوروں کی طرف سے بنائے گئے کھوہ کی بھرائی کی جائے ۔انہوںنے محکمہ لائیوسٹاک کو ہدایت کی کہ وہ تحصیل بھیرہ ‘ شاہپور ‘ ساہیوال او رکوٹ مومن کے جانوروں کوویکسین لگائی جائے تاکہ وہ منہ کھر ‘گل گھوٹو اورپیٹ کی بیماریوں سے محفوظ رہ سکیں ۔ محکمہ لائیوسٹاک اپنی موبائل یونٹ فعال رکھیں ۔کسانوں کو سیلاب کی صورت میں لائیوسٹاک کی سیلابی علاقے سے منتقلی کے انتظامات رکھنے سمیت دیگر اقدامات کرنے کی ہدایت کریں ۔انہوں نے تمام تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنروں کو سیلاب کی صورتحا ل پر نظر رکھنے کیلئے مانیٹرنگ روم قائم کرنے ‘ تمام متعلقہ اداروں کے ساتھ مل کر کراسسز مینجمنٹ کی موک ایکسرسائز کرنے ‘ ریسکیو 1122 کی کشتیاں اور حفاظتی کٹس ‘سول ڈیفنس اور نجی شعبوں کے پاس کشتیوں ‘ بلدیاتی اداروں کے ڈی واٹرنگ پمپس کی چیکنگ کی جائے تاکہ وقت ضرورت ان سے استفادہ کیا جاسکے ۔ اجلاس میں محکمہ انہار کے افسران نے بتایاکہ اس وقت منگلا ڈیم اپنی گنجائش کے مطابق بھرا ہوا ہے جبکہ اس کا آوٹ فلو پہلے کی نسبت دریائے جہلم میں چالیس ہزار کیوسک زیادہ جاری ہے ۔انہوں نے کہاکہ مزید بارشوں اور برف پگھلنے سے دریائے جہلم او رچناب میں سیلا ب کی کیفیت پیدا ہو سکتی ہے جبکہ دریاوں میں زمین کا کٹاو بھی جاری ہے جس سے زرعی زمین دریا برد ہو رہی ہے ۔ ایڈیشنل ڈائریکٹر لایﺅسٹاک نے بتایا کہ ان کے محکمہ نے سیلاب کی صورتحال کے پیش نظر متاثر ہونے والی چاروں تحصیلوں میں دس سیکٹر میںتقسیم کر رکھا ہے جن میں میانی ‘ بھیرہ ‘ چک مبارک ‘جھاوریاں ‘شاہ پو ر‘ گوندل‘ ساہیوال‘ جہانیاں شاہ ‘ لکسیاں او رمڈ ھ رانجھا شامل ہیں۔انہوں نے بتایاکہ ان چاروں تحصیلوں میں ایک لاکھ 76565 گائیں او ربھینسیں ‘65179 بھیڑ بکریاں‘98185 پولٹری کی ویکسینیشن مکمل کی جارہی ہے ۔ڈپٹی کمشنر نے بلدیاتی اداروں کو بھاری مون سون کے باعث شہر وں میں سیلابی صورتحال سے نمٹنے کیلئے بھی تمام تر انتظامات مکمل کرنے کی ہدایت کی ۔
٭٭٭٭٭

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow