سرگودہا ،سرگودہا کچی شراب پی کر مرنے والوں کی تعداد 9 ہوگئ

سرگودھا میں کچی شراب پینے سے مزید تین افراد کی اموات سے تعداد 9 ہو گئی جبکہ دو ہسپتال زیر علاج ہیں پولیس نے 6 افراد کی ہلاکت اور دو کی حالت غیر ہونے کے الزام میں شراب فروش گینگ کے خلاف مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی۔جبکہ وزیراعلی پنجاب اور آئی جی پنجاب نے سرگودھا میں کچی شراب سے ہلاکتوں کا نوٹس لیتے ہوئے رپورٹس طلب کر لی۔زرائع کے مطابق سرگودھا میں گھروں پر کچی شراب تیار کر کے فروخت کا دھندہ عروج پر ہے جس دھندہ میں سرگرم افراد کو برطرف پولیس ملازم کی سرپرستی حاصل ہے جو میاں بیوی دو سال قبل منشیات کے مقدمات میں چالان ہوئے تو پولیس اہلکار کو ملازمت سے برخاست کر دیا گیا۔ابتدائی اطلاع کے مطابق چند روز قبل بلاک 16 کے برطرف پولیس ملازم رانا خالد اپنے گھر میں دیسی شراب تیار کر کے دوستوں منظور مسیح وغیرہ کے ذریعے فروخت کی جبکہ دوستوں کو بھی پلائی جس کے نتیجہ میں رانا خالد اور اس کے پانچ دوست وقاص مسیح،کاشف مسیح،عمانوئل مسیح ،میاں محسن، منظورمسیح اور نونا جانبحق جبکہ خرم شہزاد اور کاشی حالت خراب ہونے پر ہسپتال پہنچ گئے شہر میں کچی شراب کی فروخت تین مزید افراد ڈیرہ سائیں جمال کا اسحاق، عیدگاہ بستی کا شہباز اور سلطان کالونی سکندر مسیح بھی جانبحق ہو گئے۔اس طرح سرگودھا میں کچی شراب سے اموات کا وزیراعلی پنجاب اور آئی پنجاب نے رپورٹ طلب کی تو ڈی پی او فیصل گلزار نے نوٹس لیتے ہوئے اے ایس پی سٹی سرکل کو تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے ذمہ دار کا تعین کر کے قانونی کاروائی کا حکم دیا۔گزشتہ روز تھانہ سٹی پولیس نے سب انسپکٹر محمد مختار کی مدعیت میں عظیم عرف کاشی،عمران عرف مانی اور دیگر نامعلوم کے خلاف بلاک 5 ہوٹل پر شراب پینے سے مزکورہ اموات اور حالت غیر پر زیر دفعہ 322،337J ت پ مقدمہ درج کر لیا جس میں پولیس مصروف تفتیش ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow