سرگودھا کا 70 سالہ شخص کورونا سے جانبحق یہ سرگودہا میں کورونا سے تیسری موت ہے

سرگودھا(محمد تہور بلال اصغر سے )کرونا کا شکار ، 70سالہ سرگودھا کارہائشی انسولیسن سنڑ میں جان بحق ، لواحیقن کو میت دنیے سے انکار ، صرف نماز جنازہ کی ادائیگی کے دوران چہرہ دیکھنے کی اجازات ، میت کو خصوصی بکس میں لائے گیا ، کرونا سے تیسری ہلاکت ہوئی ہے ،تفصیلات کے مطابق سرگودھا کارہائشی بلاک نمبر 25 کا 70 سالہ محمد اشرف جو طیبعت خراب ہونے پر اس کے بیٹے فوری طور پر ٹیچنگ ہپستال سرگودھا کی ایمرجنسی میں لیں آئیں جہاں ڈاکٹروں نے مرحوم محمد اشرف کو انسولین واڈ (ٹی بی ہپستال ) منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ،جس پر مرحوم کو وہاں لے جائے گئے ، کچھ گھنٹوں کے بعد محمد اشرف جان بحق ہوگیا ، لواحیقن نے میت حاصل کرنے اور گھر لیں جانے کی کوشش کی مگر ہپستال انتظامیہ نے میت دنیے سے انکار کیا اور کہا کہ آپ انکی قبر اور نماز جنازہ کا انتظام کریں جس پر لواحیقن اور انتظامیہ میں لڑائی تک کی نوبت آیا گئی ، جس پر اس کے بیٹوں مرتضی ، ندیم وغیرہ نے گھروں والوں سے رابط کے بعد اپنے والد محمد اشرف کا نماز جنازہ رات 8بجے بڑے قبرستان میں اداکی ، ہپستال انتظامیہ ایمبولنیسن میں لیکر آئی سب اہل خانہ خواتین سمیت دیگر عزیزوں نے مرحوم کا چہرہ قبرستان میں دیکھا اور نماز نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعد فوری طور ہپستال انتظامیہ کی موجودگی میں محمد اشرف مرحوم کو سپردخاک کردیا گیا ، لواحیقن کا کہنا ہے کہ انتظامیہ حھوٹ بولی رہی ہے کہ ہمارے والد کو کرونا ہے جبکہ وہ سانس کے بیماری متبلا اور عرصہ سے اس لاعلاج کروا رہے یاد رہے کہ اس قبل پرنس کانونی کی رہائشی فرح بی بی جبکہ جھاروں کارہائشی رب نواز کرونا کے باعث جان بحق ہوئے تھے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow