گھٹنوں کے درد کے مسائل اور ان کا حل تحریر ڈاکٹر گلشان کریم نیازی

گھٹنوںعمر گزرنے کے ساتھ ہی عورتیں اورمرد گھٹنوں کے درد میں مبتلا ہو جاتے ہیں۔جوڑوں کا درد بڑھتی عمرمیں ہونابہت عام ہے۔ اس کی ایک بڑی وجہ ہماری غیر معیاری غذا ہے اور آج کل کے بچے پیزا برگروغیرہ پر ہی گزارا کرتے ہیں جس سے کیلشیم اور وٹامن ڈی کی کمی ہوجاتی ہے۔ عورتوں میں جوڑوں کے در د تو تیس برس کی عمر سے ہی شروع ہو جاتے ہیں ہیں جس کی بڑی وجہ ہارمونز کی تبدیلی،غیر متوازن اور غیر معیاری غذا ہے۔کمر درد اور گھٹنوں کے مسائل سب سے زیادہ ہیں۔ ہمارے گھٹنے کی اندروالی سائیڈکل جسم کے وزن کا 95 فیصد درد برداشت کرتی ہے اور باہر والی سائیڈ صرف پانچ فیصد اس پانچ فیصد کی وجہ سے اندر والی سائیڈ میں درد شروع ہوجاتا ہے۔یہ خصوصا ان خواتین بہت عام ہوتا ہے جن کا وزن زیادہ ہو۔ ان مسائل سے تنگ آ کر ہم لوگ اپنی زندگی کے طریقہ کار میں تبدیلی لانے کی بجائے دوائیوں پر اکتفا کرتے ہیں۔(Arthirtis)آر تھر ائٹس بہت عام مرض ہے اور اس کے لیے نیشنل اور ملٹی نیشنل کمپنیاں کئی پراڈکٹس لے آتی ہیں۔ جس سے وہ کروڑوں کا بزنس کرتی ہیں جبکہ اس کا موثر اور بہترین علاج انسان کے زندگی کے طریقہ کار کو بدلنا ہے۔جن سے ان ادویات اور تکلیف سے ہمیشہ سے جان چھڑائی جاسکتی ہے۔ اس کے لئے ہمیں اپنی خاطر مصروف زندگی سے کچھ وقت نکالنا پڑے گا۔
چونکہ اصل مقصد ٹانگ کے پٹھوں کومضبوط کرناہے سواس کے لیے کچھ مفید ورزشیں مندرجہ ذیل ہیں
نمبر 1: ایک عدد تولیہ رول کرکے کے اس کو گھٹنے کے نیچے رکھیں اورپھر گھٹنے سے اس تولیے پر زور لگائیں اوراپنی برداشت کے مطابق ہولڈکریں۔شروع میں ہولڈ ٹائم 5سے 10 سیکنڈ ہوگا لیکن وقت کے ساتھ بڑھتا جائے گا اور ٹانگ کے اوپر والے پٹھے مضبوط ہو جائیں گے۔ یہ ورزش 10مرتبہ دوہرانی ہے۔ دن میں تین دفعہ 5 سے 10 سیکنڈ کا ہولڈ کرکے جاری رکھنی چاہیے.
نمبر2: اب وہی تولیا رول کرکے کے ایڑی کے نیچے رکھیں اورپھر اس کو دبائیں اور پھر ہولڈ ٹائم بڑھاتے جائیں۔ اس سے ٹانگ کے نیچے والے پٹھے بھی مضبوط ہو جائیں گے۔
نمبر 3: کرسی یا اونچی چارپائی پر بیٹھ کر کر ٹانگ نیچے لٹکائیں اور ٹانگوں کو جتنا آسانی سے ہو سکے کے پہلے فولڈکریں پھر ان کو سیدھا کردیں یہ عمل بھی ایک دفعہ میں 10 باردوہرائیں۔
نمبر 4: دودھ کا استعمال بڑھائیں۔
نمبر5: اپنے جوتوں میں خاص سول ر کھوائیں جو کہ آرتھرائیٹس سول کے نام سے مل سکتا ہے۔
نمبر 6: سیڑھیاں چڑھنے سے گریزکریں۔
نمبر7: نماز کرسی پر بیٹھ کر پڑھیں۔
نمبر8: صبح صادق کے وقت سے جب سورج کی پہلی کرنیں نکلنا شروع ہوتیں ہیں اور پھر جب سورج غروب ہوتا ہے اس وقت کی کرنوں میں قدرتی وٹامن ڈی پایا جاتا ہے اس سے مستفید ہوں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow