ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں دم توڑنے والے مریضوں کی ڈیڈ باڈی دیر سے لواحقین کو دینے پر جھگڑے معمول بن گئے

سرگودھا : ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ٹیچنگ ہسپتال سمیت ہسپتالوں میں دم توڑ جانے والے مریضوں کی فوری نعشیں نہ ملنے پر لواحقین اور ورثاء میں جھگڑے شدت اختیار کرنے لگے گزشتہ روز دو نعشیں بغیر کورونا ٹیسٹ لواحقین لیکر ہسپتال سے رفو چکر ہو گئے۔زرائع کے مطابق سرگودھا کے کسی بھی ہسپتال میں مریض کے دم توڑ جانے پرمیت کا کورونا ٹیسٹ لازمی قرار دے دیا گیا جس پر محکمہ صحت نے مریضوں کے دم توڑ جانے پر معیت لواحقین کے سپرد کرنے کی بجائے محکمہ صحت کی کورونا ٹیسٹ کو بلوا کر کورونا ٹیسٹ کا عمل شروع کر دیا جس کے باعث نعشیں تاخیر سے ملنے پر ہسپتال عملہ اور لواحقین کے درمیان جھگڑے معمول بن گئے۔معلوم ہوا ہے کہ گزشتہ روز ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال کے دو مختلف وارڈز میں زیر علاج مریض دم توڑ گئے تو لواحقین نے لاشیں لے جانے کی کوشیش کی تو عملہ نے انہیں کورونا ٹیسٹ کے بغیر نعشیں دینے سے انکار کیا جس پر فریقین میں توں تکرار طول پکڑ گیا اور لواحقین ہسپتال انتظامیہ کو جل دے کر بغیر کورونا ٹیسٹ نعشیں لیکر رفو چکر ہو گئے اور انہیں آبائی علاقوں میں لیجا کر ان کی تدفین کردی گئی۔
Unn

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow