چار سال تک لاء کی فائنل ائیر طالبہ کو زیادتی کا نشانہ بنانے والے ملزمان کے خلاف تھانہ کڑانہ میں مقدمہ درج

سرگودھا : لاء کالج فائنل ائیر طالبہ کو کنٹرول شیڈ لیجا کر شراب کا نشہ دے کر دوست کے ہمراہ آبروریزی کرنے والوں کے خلاف مقدمہ درج دونوں ملزمان چار سال تک لڑکی کی آ برو ریزی کرتے رہے جبکہ دوسرا ظلم یہ ان ملزمان نے کیا کہ  برہنہ تصاویر اور ویڈیو بنا کر لڑکی کو  بلیک میل کیا اور لاہور میں موجود دو دوستوں کو بھی لڑکی پیش کرتے رہے لاہور میں انسپکٹر پولیس اور اس کے دوست وکیل نے بھی لڑکی سے زیادتی کی اور برہنہ تصاویر،ویڈیو بنا لیں اور بعد ازاں یہ بھی بلیک میل کرتے رہے اس دوران ملزمان نے    گاڑی،طلائی زیورات،لاکھوں روپے اور کئی قیمتی اشیاء ہتھیا لیں جبکہ لڑکی کی برہنہ تصاویر و ویڈیو طالبہ کے رشتہ داروں کو وائرل کر دیں جس پر بدنام ہونے والی طالبہ نے پورے گروہ کے خلاف چار سال بعد مقدمہ درج کروا دیا پولیس نے بلیک میلنگ اور آبروریزی کے مقدمہ کی تفتیش شروع کر دی۔زرائع کے مطابق سرگودھا کے نواحی چک 102 جنوبی کا شہری غلام مصطفی کسی کیس میں چار سال قبل 2016 میں لاہور جیل بند تھا جس کی بیوی اور لاء کالج طالبہ بیٹی نسرین مصطفی گھر پر اکیلی ہو گئیں تو باپ کا تعلق دار چک 104 الف شمالی کا مظاہر کلیار اپنے دوست شوکت بلوچ کے ہمراہ طالبہ نسرین کو اپنے کنٹرول شیڈ لے گیا جہاں شراب پلا کر دونوں نے دوشیزہ سے اجتماعی زیادتی کی اور ویڈیو بنا کر بلیک میل کرتے ہوئےطالبہ کو لاہور لیجا کر اپنے دوستوں سب انسپکٹر پولیس رانا انور اور وکیل جاوید اقبال کو پیش کر دیا جہاں دونوں نے طالبہ کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا اور انہوں نے بھی ویڈیو بنا لی اور ویڈیو اور برہنہ تصاویر کے زریعے بلیک میل کر کے مختلف مقامات پر طالبہ کو بلوا کر کئی بار آبرو ریزی جاری رکھتے ہوئے گاڑی،کمپنی کے کاغذات، طلائی زیورات، نقدی،پے آڈر، گائے،موبائل فون،ہتھیا کر سادہ اشٹام پیپر پر والد کے دستخط اور نشان انگوٹھا لگوا کر مزید لوٹ مار میں ناکامی پر طالبہ کی آبروریزی کے دوران برہنہ تصاویر اور ویڈیو طالبہ کے رشتہ داروں کو وائرل کرکے دی۔پولیس تھانہ کڑانہ نے مئی 2016 سے طالبہ سے شروع ہونے والی بدکاری،لوٹ مار اور بلیک میلنگ کا چار سال بعد گزشتہ روز زیر دفعہ 376/292 ت پ مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow