سرگودہا میں ہفتے کے روز تاجروں نے زبردستی دوکانیں کھول لیں پولیس ان ایکشن تاجروں کو گرفتار اور مقدمات درج کرلئے گئے

سرگودھا(محمد تہور بلال اصغر سے )حکومت کی طرف سے 9مئی سے لاک ڈاون میں نرمی کے اعلان پرسرگودھا کے دوکانداروں نے کاروبار جاری کیا تو انتظامیہ نے زبردستی بند کرواتے ہوئے تاجروں کو گرفتاریوں اور جرمانوں کا سلسلہ شروع کردیا۔رینجز کی آمد ، صرافہ بازار میں متعدہ دوکانوں کو سیل کردیا گیا ، جس کے باعث سرگودھا میں جزوی لاک ڈاون کی صورتحال بدستور قرار رہی اور تاجروں میں حکومت کے خلاف اظہار نفرت دیکھنے میں آیا ہے۔ذرائع کے مطابق حکومت کی جانب سے لاک ڈاون میں نرمی کے اعلان پر سرگودھا میں چھوٹی تاجروں نے صبح سویرے اپنی دوکانیں کھول لیں جس پر اندرون شہر پولیس سکوارڈ نے گشت کر کے زبردستی دوکانیں بند کروانا شروع کر دیں جبکہ میٹروپولیٹن کارپوریشن کی جانب سے لاک ڈاون کو برقرار رکھنے کی منادی اور چیف آفیسر میٹروپولیٹن کارپوریشن نے دوکانیں بند کروا دیں اسی طرح اسسٹنٹ کمشنر عمر دراز گوندل نے بازاروں میں اچانک چھاپے مار کر لاک ڈاون کی خلاف ورزی پر دوکانداروں کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے انجمن تاجران کچہری بازار کے قائمقام صدر سمیت متعدد تاجروں کو گرفتار اور جرمانے کئے جس میں انجمن تاجران کے ذیشان چوہدری کو دس ہزار جرمانہ کر کے رہا کر دیا گیا اس صورتحال کے باعث تجارتی حلقوں میں حکومت کے بارے اظہار نفرت پایا گیا جن کا کہنا تھا کہ حکومتی اعلان پر دوکانیں کھولنے والے چھوٹے ٹیکس گزار تاجروں کی گرفتاریاں اور بھاری جرمانے کر کے شریف شہریوں کا استحصال کیا جا رہاہے۔ جس کی وجہ سے دوکانداروں میں شدید اضطراب پایا جا رہا ہے اور شہر بھر میں ایک بار پھر جزوی لاک ڈاون کی صورتحال برقرارہے۔جو حکمرانوں کے لئے بھی لمحہ فکریہ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow