بازاروں میں رش کم کرنے کیلئے اوقات کار رات 11 بجے تک کیے جائیں راؤ طاہر مشرف

سرگودھا (بیورو رپورٹ) لاک ڈاؤن میں 5 بجے تک نرمی کے باعث بازاروں میں خریداروں کا بے پناہ رش سے لگتا ہے کہ حکومت نہیں چاہتی کہ کرونا پر قابو پایا جائے 5 بجے کے بعد لاک ڈاؤن کی منطق سمجھ سے بالا تر ہے 8 گھنٹے کیلئے لاک ڈاؤن ختم کرنے کی وجہ سے بازاروں میں دھکم پیل سے کرونا وائرس پھیلنے کے امکانات بہت زیادہ بڑھ گئے ہیں جس کی ذمہ دار حکومت ہے ان خیالات کا اظہار سابق امیدوار حلقہ این اے 88 راؤ طاہر مشرف نے کیا انہوں نے کہا کہ اگر خریداری کا ٹائم صبح 9 بجے سے رات 11 بجے تک عید کے دنوں میں کردیا جائے تو بازاروں میں لوگوں کا رش نہ صرف کم ہوگا بلکہ دیہی علاقوں کے لوگ دن میں اور شہری افطاری کے بعد آسانی سے خریداری کرسکیں گے راؤ طاہر مشرف نے کہا کہ 9 سے 5 بجے تک دیہی اور شہری لوگ بازاروں میں جس قدر نظر آرہے ہیں اس سے تو یہ یقین ہو چلا ہے کہ حکومت عوام سے بدلہ لینے پر تُلی ہے سمجھ نہیں آتی کہ حکومت کو اس طرح کے بونگے مشورے کون دے رہا ہے جب شاپنگ مالز‘ پلازے‘ ٹرینیں‘ بسیں‘ بازار‘ مارکیٹیں 5 بجے تک کھول دی گئی ہیں تو رات 11 بجے تک کھولنے میں کیا حرج ہے راؤ طاہر مشرف نے کہا کہ اس وقت کرونا وائرس پوری دنیا میں پھیل رہا ہے پاکستان کے عوام اتنے زیادہ پڑھے لکھے نہیں جو ایس او پیز پر عملدرآمد کریں یہ سب حکومتی نااہلی ہے کہ اس نے 5 بجے تک لاک ڈاؤن میں نرمی کی جس سے کرونا پھیلے گا اگر وقت بڑھا دیا جائے تو ایس او پیز پر عملدرآمد بھی ہوسکتا ہے اور خریداری بھی آسانی کیساتھ ہونے کے علاوہ کرو

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow