ہر ضلع میں کورونا مریضوں کیلئے الگ ہسپتال قائم کیا جائے ڈاکٹر سکندر وڑائچ صدر پی ایم اے

 

سرگودھا (شفیق طاہر سے  ) پی ایم اے پنجاب کے نائب صدر ڈاکٹر سکندر حیات وڑائچ نے اپنے ایک بیان میں حکومت پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ صوبہ پنجاب میں ہر ضلع میں کرونا کے مریضوں کیلئے علیحدہ ہسپتال بنائے جائیں اور ڈاکٹرز‘ نرسز و پیرا میڈیکل سٹاف کے لئے ہر ضلع میں آئی سی یو کے 10 بیڈز مختص کئے جائیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس وقت نہ ہی حکومت پی ایم اے سمیت دیگر تنظیموں کی بات مان رہی ہے اس سے اوپر سونے پر سوہاگا یہ ہے کہ عوام الناس نے بھی تمام احتیاطی تدابیر کو رد کرکے کرونا کو دعوت دی ہے کہ وہ اپنا اثر دیکھا سکے۔ جس طرح بازاروں میں عوام الناس کا رش ہے اس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ شاید آنے والے دن محکمہ صحت پنجاب کے لئے انتہائی سخت ہونگے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک المیہ یہ بھی ہے کہ کرونا کے شکار لوگ انتہائی سیریس حالت میں ہسپتالوں میں آرہے ہیں۔ جس کی وجہ سے اموات کی شرح میں دن بدن اضافہ ہو سکتا ہے۔ جو کہ ایک تکلیف دہ بات ہو گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ پہلے ہی ہمارے ملک میں آبادی کے لحاظ سے ہسپتالوں‘ ڈاکٹرز و نرسز کی شدید کمی ہے۔ اگر خدانخواستہ یکدم مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوا تو موجودہ ہسپتال‘ ڈاکٹرز‘ و نرسز ناکافی ہو سکتے ہیں۔ اس لئے اشد ضروری ہے کہ حکومت حفاظتی تدابیر پر سختی سے عمل کروائے اور عوام اس پر عمل کرے۔ رش والی جگہ پر جانے سے گریز کریں۔ اگر جانا ناگزیر ہو تو کم از کم دو میٹر کا فاصلہ رکھیں اور ماسک لگا کر جائیں۔ اس کے ساتھ ساتھ اپنے ہاتھوں کو بار بار صابن سے دھوئیں اور اپنے چہرے کو اپنے ہاتھوں سے مت چھوئیں۔ اگر کسی کو کھانسی‘ نزلہ ‘ زکام کی معمولی تکلیف ہو تو ماسک پہن کر گھر میں ہی علیحدگی اختیار کر لے۔ طبعیت بگڑنے کی صورت میں اپنے نزدیکی ہسپتال میں آکر چیک کروائیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow