سرگودہا میں میڈیکل فضلہ عوام کی صحت کیلئے خطرہ بن گیا

سرگودھا(محمد تہور بلال اصغر سے)متعلقہ اداروں کی مجرمانہ چشم پوشی کے باعث میڈیکل فضلہ جات سمیت آپریشن تھیٹر اور وارڈوں سے نکلنے والا ناکارہ سامان صحت یاب شہریوں اور مریضوں کیلئے خطرہ بن کر رہ گیاتفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب نے سرگودھا کے سینکڑوں سرکاری و پرائیویٹ ہسپتالوں کو سرنجوں و دیگر ناکارہ سامان تلف کرنے کیلئے انسنریٹرز کی تنصیب ضروری قرار دیتے ہوئے نوٹسز جاری کئے تھے، تاہم اس حوالے سے نہ تو انتظامیہ کوئی اقدام اٹھا سکی اور نہ ہی ہسپتالوں نے میڈیکل ویسٹ کو ٹھکانے لگانے کا مناسب انتظام کیاگیا،اور اس سلسلہ میں تاحال روایتی طریقے رائج ہیں اس حوالے سے فریقین کے مابین معاملات مسلسل التواء کا شکار ہیں،جبکہ زیادہ تر ہسپتالوں کا ویسٹ انہی کے ملازمین اٹھا کر فروخت کررہے ہیں، یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ بیشتر سرکاری ہسپتالوں میں بھی یہی صورتحال ہے، صرف ٹیچنگ ہسپتال میں انسٹریٹرز کی سہولت فراہم کی گئی تھی تاہم اس کے باوجود صورتحال کنٹرول نہیں ہو سکی، اور مجموعی طور پرشہریوں کی صحت کیلئے رسک بن کر رہ گئی ہے،ہزاروں مریضوں کے ساتھ ساتھ ان کے لواحقین کی زندگیاں بھی داؤ پر لگی ہوئیں ضرورت اس امر کی ہے کہ ارباب اختیار حکومتی قوانین پر عملدرآمد کو یقینی بناتے ہوئے اس مسئلہ کا مربوط حل نکالیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow