منی پٹرول ایجنسیوں انتظامیہ کیلئے درد سر مگر کاروائی صفر

سرگودھا(محمد تہور بلال اصغر سے)پابندی کے باوجود 600سے زائد غیر رجسٹرڈ منی آئل ایجنسیاں انتظامیہ کی ناک تلے بدستور کھلم کھلا قوانین کی دھجیاں بکھیر رہی ہیں،اس امر کا انکشاف حساس ادارے نے اپنی رپورٹ میں کیا،سب سے زیادہ تعداد کوٹمومن میں ہے اسی طرح ساہی وال، سلانوالی، بھلوال، بھیرہ،شاہ پور اور تحصیل سرگودھا میں بھی جا بجا غیر قانونی منی آئل ایجنسیاں قائم ہیں،لگ بھگ تمام ایجنسیاں زرعی زمینوں کے پیٹر انجن چلانے کیلئے تیل کی محدود سٹوریج کے لائسنس پر قائم ہیں، جنہیں چند سال قبل حکومت نے منسوخ کر کے اضلاع کی انتظامیہ کو صورتحال کے تدارک کا ٹاسک سونپا تھا جس پر ابتداء میں کاغذی کاروائی کے بعد کام ٹھپ ہو گیا، رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ اس حوالے سے چند ماہ قبل بھی اسسٹنٹ کمشنرز نے سروے کر کے رپورٹس ضلعی انتظامیہ کو ارسال کی جن پر عملدرآمد روایتی سستی کا شکار ہو کررہ گیا ہے، جبکہ یہ منی آئل ایجنسیاں جہاں پیٹرولیم مصنوعات کی اضافی قیمتوں پر فروخت میں ملوث ہیں وہاں ملحقہ علاقوں کیلئے ایک رسک بنی ہوئی ہیں، ضرورت اس امر کی ہے متعلقہ ادارے ٹھوس اقدامات یقینی بنائیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow