شادی ہالز کی بندش لاکھوں ملازمین فاقہ کشی پر مجبور سرگودہا میں ورکرز کا پریس کلب کے سامنے احتجاج

سرگودھا(محمد تہور بلال اصغر سے)شادی ہالز کی بندش سے لاکھ افراد فاقہ کشی پر مجبور ، گھروں کے چولہے بجھ جائے رہے ہیں ،3 ماہ سے گھروں کے کرایہ بجلی کی کٹ گئی ، گیس بل کے ساتھ ساتھ ضرورت پوری کرنے انتہائی مشکل ہوگیا ، شادی ہالز ایسوسی ایشن کی کال پر شادی ہالز و ریسٹورنٹس ملازمین ویٹرز، کک، خاکروب، چوکیداراور مالکان نے بھینس کے آگے بین بجا کر احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے زبردست نعرے بازی کی۔جن کا کہنا تھا کہ حکومت سے مطالبات بھینس کے آگے بین بجانے کے مترادف ہے اس موقع پر مظاہرین نے اعلان کیا کہ اگر مطالبات پورے نہ ہوئے تو 30 جون کو سڑکوں پر احتجاج پر مجبور ہونگے۔تفصیلات کے مطابق سرگودھا ضلع کے 250 سے زائد میرج ہالز اور ریسٹورنٹس کے ملازمین وہٹرز، کک، خاکروب،چوکیدار اور مالکان نے میرج ہالزز اور ریسٹورنٹس کی ایس او پیز کے ساتھ بحالی کا مطالبہ کرتے ہوئے خوشاب روڈ میرج ہال سے راو طارق اسلام کی قیادت میں سرگودھا پریس کلب تک مارچ کر کے بھینس کے آگے بین بجانے کا انوکھا احتجاجی مظاہرہ کیا جن کا موقف تھا کہ حکومت کو مطالبات پیش کرنا بھینس کے آگے بین بجانے کے مترادف ہے۔ احتجاجی مظاہرین کا کہنا ہے کہ شادی ہالز گزشتہ 3 ماہ سے بند ہیں جس کی وجہ سے مالکان سمیت 10 ہزار سے زائد چھوٹے ملازم فاقہ کشی کا شکار ہیں۔انہوں نے مطالبات پیش کئے جن میں کہا گیا کہ شادی ہالز،ریسٹورنٹ ملازمین کے لئے فوری امدادی پیکج کا اعلان کیا جائے،ملازمین کے لئے ماہانہ بنیاد پر احساس پروگرام کے مطابق انتظام کیا جائے،ملازمین کے گھروں کا کرایہ،بلاک بجلی و گیس،بچوں کی فیس مکمل معاف کیا جائے۔ہالز و ریسٹورنٹ کو ماہانہ کرایہ کی ادائیگی سے مستثی قرار دیا جائے،شادی ہالز و ریسٹورنٹس کو مکمل طور پر ہر طرح کے ٹیکسز سے کم ازکم دوسال کے لئے مستثی قرار دیا جائے،مالکان کو اپنے کاروبار چلانے کے لئے بلاسود قرضہ کا اجراء کیا جائے۔ان کا کہنا تھا کہ ہالز و ریسٹورنٹس کو فوری کھول دیا جائے جس کے لئے مالکان و ملازمین گورنمنٹ کی تعین کردہ ایس او پیز پر عمل درآمد کرنے کی یقین کرواتے ہیں۔صدر راو طارق اسلام اور جنرل سیکرٹری ڈاکٹر وقاص لطیف بیگ نے وزیراعظم، چیف جسٹس، وزیراعلی،وزیر انڈسٹری سے فوری مطالبات پورے کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہمارے مسائل کے حل کے لئے فوری اقدامات کئے جائیں ورنہ 30 جون سے ہم اپنے لاکھوں بھوکے اور افلاس کے مارے ملازمین کے ساتھ اپنے معاشی قتل کے خلاف سڑکوں پر نکلنے پر مجبور ہونگے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow