ڈپٹی کمشنر اور ڈی پی او کا بین المذاھب ھم آہنگ کمیٹی کے شرکاء سے خطاب

سرگودھا(14جولائی2020)۔ڈپٹی کمشنر عبداللہ نیئر شیخ نے کہا ہے کہ مختلف مکاتب فکر کے علماءکرام ایک گل دستہ کی مانند ہیںجن کے باہمی اتفاق و اتحاد سے ضلع میں امن قائم ہے حکومت علماءکرام کے جذبہ کی قدر کرتی ہے اور امید رکھتی ہے کہ عید الا ضحی پر کرونا وائرس سے بچاﺅ کیلئے حکومت کے جاری کردہ ایس او پیز پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائیگا۔ وہ ضلعی امن کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کر رہے تھے۔ اجلاس میں ڈی پی او فیصل گلزار ،اے ڈی سی جی بلال فیروز جوئیہ،مولانا اکرم طوفانی ،عرفان اللہ ثنائی ، قاری وقار عثمانی، قاری احمد علی ندیم،مولانا عمر فاروقی،، قاری عبدالوحید، عبداللہ سعید ہاشمی، قاضی نگاہ مصطفی ،ریاست فیروزی،احمد مسعود زاہدی اور سید حسن کرمانی نے شرکت کی۔ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ عیدالا ضحی پر ضلع بھر میں 10مویشی منڈیاں لگائی جارہی ہیں،اسکے علاوہ کسی اور جگہ مویشی فروخت کرنے کی کسی صورت اجازت نہیں ہو گی۔انہوںنے کہاکہ مویشی منڈیوں میں ماسک کے سو فیصد استعمال کو یقینی بنایا جائیگا۔ نماز عید کے اجتماعات کھلی جگہ پر منعقد ہو گے۔ جہاں اجتماعات سے پہلے اور بعد میں جراثیم کش سپرے کیا جائیگا۔اجتماعات میں نمازیوں کے مابین سماجی فاصلوں اور ماسک کے استعمال کو بھی یقینی بنایا جا ئیگا۔انہوںنے علماءکرام سے اپیل کی کہ وہ اپنے جمعة المبارک کے اجتماعات میں عوام میں اس حوالے سے شعور اجاگر کریں۔ انہوںنے کہاکہ صاحب ثروت میں اجتماعی قربانی کا شعور اجاگر کیا جائے ۔نفلی قربانی کے خواہش مند افراد کرونا صورتحال سے متاثرہ افراد کی مدد کر کے زیادہ ثواب حاصل کر سکتے ہیں۔ڈپٹی کمشنر نے کہاکہ یونین کونسل سطح پر قربان گاہیں بنانے کی بھی تجویز پر غور ہو رہا ہے تاکہ گھروں کی بجائے ایک ہی جگہ قربانی کے جا سکے۔ قربانی کے جانور وں کی آلائشوں کو بروقت ٹھکانے لگانے کیلئے بلدیاتی اداروں نے منصوبہ بندی کرلی ہے۔انہوںنے کہاکہ عید الفطر پرہماری غفلت سے میل جول زیادہ ہونے سے کرونا کیسز میں اضافہ ہوا۔ علماءکرام عوام میں شعور کر اجاگر کریںکہ عید الا ضحی پر ضرورت کے تحت میل جول رکھا جائے تاکہ اس دفعہ کرونا کو دوبارہ پھیلنے سے روکا جا سکے۔
ڈی پی او فیصل گلزار نے اجلا س خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ مذہبی منافرت کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائیگا ۔ علماءکرام عوام الناس میں سوشل میڈیا کے مثبت استعمال کے بارے آگاہی پیدا کریں ۔ انہوں نے مزید کہاکہ سوشل میڈیا کے غلط استعمال کے بارے زیروٹارلینس کی پالیسی اپنائی گئی ہے او رخلاف ورزی پر سخت کارروائی کی جائیگی۔انہوںنے کہاکہ کرونا وائرس ختم نہیں ہوا گرمی کی وجہ سے میل جول کم ہونے سے کرونا کم ہواہے او رزیادہ ملنے سے یہ دوبارہ سراٹھا سکتا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کرونا ایس او پیز کے حوالے سے مساجد میں سب سے زیادہ عمل درآمد ہو جس پر علماءکرام خراج تحسین کے مستحق ہیں ۔ ڈی پی او نے کہاکہ عید الاضحی کے اجتماعات او رعید کی خریداری کے حوالے سے بازاروں ‘مارکیٹوں کی فول پروف سیکورٹی کو یقینی بنایا جارہاہے ۔ بعدازاں بین المذاہب ہم آہنگی کمیٹی کااجلاس ڈپٹی کمشنر عبداللہ نیئر شیخ کی صدارت میں منعقد ہوا ۔ اجلاس میں ڈی پی او فیصل گلزار کے علاوہ فادر مختار عالم ‘ پادری ایڈورڈ ظفر اختر ایڈووکیٹ ‘ سکندر فرمان ‘ پرویز شالی ‘ مولانا اکرم طوفانی ‘ قاری وقار احمد عثمانی ‘ قاری احمد علی ندیم ‘ عرفان اللہ ثنائی ‘ سید احمد مسعود سمیت دیگر نے شرکت کی ۔ ڈپٹی کمشنر نے کہاکہ بین المذاہب ہم آہنگی وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ ضلع میں بین المذاہب کے حوالے سے کوئی ایشوز نہ ہیں ۔ تمام مذاہب کے افراد کو مکمل مذہبی آزادی حاصل ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتی عبادت گاہوں میں بھی کورونا ایس او پیز پربھر پور انداز میں عمل ہورہاہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اقلیتی برادری کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کیلئے پر عزم ہے ۔ ڈی پی او فیصل گلزار نے کہا کہ اقلیتی عبادت گاہوں کی فول پروف سیکورٹی کو یقینی بنایاجارہاہے او بھر پور انداز میں مہم جاری ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ہم مذہبی ہم آہنگی کو برقرار رکھ کر ملک دشمن عناصر کے عزائم کو خاک میں ملاسکتے ہیں ۔
قبل ازیں ضلعی امن کمیٹی کے اجلاس میں کمیٹی کے ممبر علامہ پیر جاوید قادری کے انتقال او رقاری وقار عثمانی کے والد کی وفات پر فاتحہ خوانی بھی کی گئی ۔ شرکاءنے ضلع میں امن وامان کی فضا کو پروان چڑھانے میں مرحوم علامہ پیر جاوید قادری کی خدمات کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا ۔
٭٭٭٭٭
پریس ریلیز
سرگودھا(14 جولائی 2020)۔ اقوام متحدہ اور او۔ آئی۔ سی کو مسئلہ کشمیر حل کروانے کے لیے سنجیدگی سے سوچنا چاہیے۔ 13جولائی 1931ئ کو ظلم و بربریت کا انوکھا واقعہ رونما ہوا۔ جب 22کشمیری مسلمانوں نے تکمیلِ اذان کے لیے اپنی جانوں کا نذرانہ دیا۔ تحریکِ آزادی¿ کشمیر اب حتمی نتیجے کی طرف پہنچ چکی ہے۔ حصولِ آزادی کی اس جنگ میں پاکستان کا بچہ بچہ اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑا ہے۔ اِن خیالات کا اظہار ممتاز ماہرِ قانون اظہر امین شیخ نے ریڈیو پاکستان کے خصوصی پروگرام دانش کدہ میں گفت گو کرتے ہوئے کیا۔قبل ازیں سماجی رہنما شاہین احسان مغل ، ڈاکٹر ہارون الرشید تبسم ،ممتاز عارف اور محمد علی تبسم نے بھی اظہار خیال کیا۔اظہر امین شیخ نے مزید کہا کہ مسئلہ کشمیر باتوں سے نہیں عمل سے حل ہوگا۔ ہمیں بھارتی جارحیت کے خلاف صدائے احتجاج بلند کرنی چاہیے۔ شاہین احسان مغل نے کہا کہ ہماری مسلح افواج سرحدوں پر بھارتی اشتعال انگیزی کا جواب دے رہی ہے۔ پاک فوج نے قدم قدم پر کشمیریوں کا ساتھ دیا ہے۔ آزادی کی اس جنگ میں ا±نھیں اکیلا نہیں چھوڑا۔ پوری قوم کو دشمن کا مقابلہ کرنے کے لیے ہمہ وقت تیار رہنا چاہےے۔ ڈاکٹر ہارون الرشید تبسم نے کہا کہ کشمیر ہماری شہ رگ ہے۔ اس کی حفاظت ہر پاکستانی کا فرض ہے۔ حقیقت یہ ہے کہ کشمیری مجاہدین ہماری بقاءکی جنگ لڑ رہے ہیں۔ بھارت نے جنوبی ایشیا ءمیں امن تباہ کر دیا ہے۔ کشمیریوں کے ساتھ ہمارا قلبی رشتہ کلمہ¿ طیبہ سے جڑا ہے۔ کشمیری ترانوں سے پروگرام کو چار چاند لگ گئے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow