نوشہرہ وادی سون ،درختوں کٹائی جاری محکمہ جنگلات فرضی کاروائیوں تک محدود

نوشہرہ وادی سون (نمائندہ الجلال)وادی سون کے مختلف جنگلات میںدرختوںکی کٹائی دھڑلے سے جاری ہے محکمہ جنگلات کے افسران بالا کو اطلاع دینے کے باوجود کاروائی سے گریزاںہیں گزشتہ روز لاکھوں روپے کی لکڑی سمگل کرنے والے شخص کو معمولی جرمانہ ڈال کرافسران کو سب اچھا کی رپورٹ جاری کردی گئی اہلیان علاقہ نے اعلی حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کردیاتفصیل کے مطابق گزشتہ روز وادی سون موضع سودھی سے جنگل سے غیر قانونی لکڑی بذریعہ گاڑی نمبر JU.7300 صوبہ کے پی کے سمگل کی جا رہی تھی مقامی افراد نے محکمہ جنگلات خوشاب کے ڈی ایف او کو فون کرکے اطلاع دی کی لکڑسمگل کی جا رہی ہے جس پر انہوں نے ایکشن لیتے ہوئے تحصیل نوشہرہ محکمہ جنگلات کے رینج آفیسر کو کاروائی کرنے کی ہدایت جاری کی جس پر گاڑی کو سوڈھی موڑ کے قریب روک لیا گیا جبکہ اس گاڑی کے پاس محکمہ جنگلات کا پرمٹ بھی نہ تھا وہ غیر قانونی طریقہ سے لکڑ لیکر جا رہا تھا اس حوالے سے جب رینج آفیسر نوشہرہ محمد عثمان سے رابطہ کیا تو انہوں نے بتایاکہ ہم نے پانچ ہزار روپے جرمانہ کیا ہے جبکہ ایک ٹریکٹر ٹرالی جو ہزاروں روپے کی لکڑ لیکر سمگل کرتی ہیں تو اس پر جرمانہ دس ہزار روپے کیا جاتا ہے اور لاکھوں روپے کی لکڑ سمگل کرنے والے پر پانچ ہزار روپے جرمانہ کرنا سمجھ سے بالاتر ہے وادی سون میں سرکاری درخت محکمہ جنگلات کی ملی بھگت ،نااہلی یا لاپرواہی کی وجہ سے اپنی صفحہ ہستی مٹنے لگے ہیں ٹمبر مافیا اپنی مضبوط گینگ کے ہمراہ محکمہ کے اہلکاروں سے ملکر درخت کاٹ کر لے جانے لگے جبکہ ضلعی انتطامیہ اس تمام صورتحال پر خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں اور ان مافیا کو کھلی چھٹی دے رکھی ہے اہل علاقہ کی سماجی،سیاسی حلقوں نے وزیر اعلی پنجاب،وزیر جنگلات،کمشنر سرگودھا،ڈپٹی کمشنر خوشاب،اسسٹنٹ کمشنر نوشہرہ سے فوری درختوں کی کٹائی ،ماحولیاتی آلودگی روکنے اور گاڑی نمبرJU.7300کے مالکان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow